Kaamchor Bhoot By Shafiq ur Rehman PDF

Kaamchor Bhoot By Shafiq ur Rehman PDFDownload Urdu book Kaamchor Bhoot By Shafiq ur Rehman in PDF. A nice work of humor.

Some excerpts from Kaamchor Bhoot PDF 

 اور ان آسيب ذده مکانوں ميں کچھ اسيے بهي تهے جنهيں پڑوسيوں نے جان
بوجھ کربد نام کر رکها تها، تاکہ کوئي کرائے دار نہ آسکے اگر آتا تو رات کو پتهر مار کر پراسرا روشنيوں اور آوزوں سے ڈراديتے ، تاکہ مکان خالي رہے اور ضرورت پڑنے پر استعمال کيا جاسکے جب کبهي مجهےکسي آسيب زده عمارت ميں ٹھہرنے کا اتفاق ہوتا توخوفناک کہانيوں سے پہلےاتنا ڈرا ديا جاتا کہ رات کو سوتے وقت کچھ نہ کچھ  نظر آنے لگ جاتا، ايک دفعہ جب ميں سونے کي کوشش کررہا تها تو سامنے کي ديورا پر ايک مگر مچھ  دکهائي ديا، سوچا کہ مگر مچھ  پاني کے قريب ہوتا هے ، اس کا ديوار پر چڑهنا بالکل ہی  نا ممکن سي بات ہے ، ليکن سامنے ہو بہو مگر مچھ تها، پهر اس نے ايک لومڑي نما چيز کا تعاقب کيا ، ہمت کرکے اٹها تو ديکها کہ دوسرے کمرے کي روشني ايک پيالہ نما شيشے اور چهپکلي پر اس طرح پڑ رہي تهي، کہ ہر شے
کا عکس کئي گناه نظر آرہا تها اور يہ کہ چهپکلي نے ايک بهنگے کا تعاقب کيا
تها۔

------------------------------------- 

اگلے ہفتے جب رات کو پاني لگانے کي باری آئي تو مجهے سڑک سے جانا
چاهئيے تها، پهر يونہي خيال آيا کہ شايد يہ نرا وہم ہو يا بهوت کو غلط فہمي ہوئي ہو اور اس نے مجهے کوئي اور شخص سمجها ہو، ميں دو باره شمشان
والے راستے سے گزرا ، کيکر کے درختوں کے بعد ميں اور بهوت آگے
پيچهے چل رہے تهے، مچهر اڑا کر ميں نے اپني گردن کهجائي، اس نے بهي
بالکل يہي کيا، ميں نے دو چهينکيں ماريں، اس نے بهي بالکل يہ ہي کيا، اس نے
بهي کوشش کرکے دو ہلکي سي چهينکيں ماريں، ميں کهانسا وه بهي کهانسا،
غصہ تو مجهے تب بهي آيا جب ميں نے ايک فلمي گيت گانا شروع کيا اور اس
نے نہايت بےسري آواز ميں نقل اتاري، دوست احباب سب جانتے هيں کہ
ماشاءالله ميري آواز بڑي سريلي هے اور دهنوں سے بهي بخوبي واقف
هوں،ايسے نفيس گيت کا يوں ستيا ناس ہوتے ديکه کر مير خون کهولنے لگا،
فورا اگلے روز ايک پہنچے ہوئے بزرگ کے پاس گيا درخواست کي کہ ايسے
بد تميز اور بد زوق بهوت سے ميرا پيچها چهڑائيے، انہوں نے ايک تعويز ديتے
هوئے فرمايا کہ ميں اسے دهنے بازو پر باندھ لو، پهر کچه سوچ کر تعويز واپس
لے ليا اور بولے اگر بهوت ہو بہو وه کرتا هے جو جو تم کرتے ہو تو اس سے
کام کيوں نہيں ليتے ؟ اس سے کهيتوں ميں گوڈي کراؤ، چناچہ رات کو دو
کهرپے ، دو درانتياں اور ديگر مطلوبہ چيزيں سنبهاليں اور شمشان کي طرف
چل ديا، کيکر کے درختوں سے بهوت کو ساته ليا اور کهيتوں ميں گوڈي شروع
کردي، نقل اتارنے ميں تو وه استاد تها، فالتو کهرپہ پکڑ کر فورا گوڈي کرنے
لگا، تهک کر ميں نے ماتهے پر سے پسينہ پونچهتا تو وه بهي اپنے ماتهے پر
ہاته پهير تا هے، ميں نے درانتي چلائي تو اس نے زائد درانتي اٹها لي، ميں کام
چهوڑ کر سانس لينے لگا تو وه بهي هانپتا هوا ميرے سامنے آبييٹها اورگهورنے
لگا، پهر ہم دونوں سر گرمي سے اپنے اپنےکام ميں لگ جاتے ، تب بهي ميں
نے سوچا کہ شايد يہ بهوت اتنا برا بهي نهيں هے ، فقط اسے گهورنے کي عادت
کہيں سے پڑ گئي هےاگر کسي طرح يہ بيہوده عادت چهڑا دي جائے تو کوئي
وجہ نہيں کہ يہ اچها خاصا معقول بهوت نہ بن سکے ، ممکن ہے کہ ناساز گار
حالات اور لگا تار تنہائي کي وجہ سے يہ ايسا ہوگيا هے ،شايد اسے رفاقت کي
تلاش ہو، ويسے بهي نہ صرف محنتي بهوت هے بلکہ وقت کا پابند بهي يہ
خوبي انسانوں ميں بہت کم ملتي هے اور ادهر ميں کهيتي باڑي کرنے کے لئے
يہاں اکيلا ہوں ، ان دنوں ميرا کوئي مددگار بهي نہيں ، اگر يہ ميرا ہاته بٹانے کو
تيار ہو تو اسے ہر مہينے کچه تنخواه دے ديا کروں گا، چناچہ اسے
اتم کهيتي، مدهم بيوپار
نکهد چاکري،بهيک ندارد
والي مشہور کہاوت سنائي، جسے اس نے فورا دوهرايا، صبح کے چار بجے
تک ميں نے اس سے خوب کام ليا، پهر انگڑائي ليتے ہوئے کہا بہت تهک گئےہيں اب چلنا چاهئيے وه بهي انگڑائي لے کر بولا بہت تهک گئے ہيں اب چلنا
چاهئيے، ميں خوش خوش گهر پہنچا کہ ايک اچها اسسٹنٹ مل گيا هے ليکن
اگلے دن جو کهيتوں کو ديکهتا ہو تو گوڈي فقط اس حصے ميں ہوئي تهي جس
ميں ميں نے کام کيا تها، جس حصے ميں بهوت ہاتھ چلاتا رہا وه بدستور گهاس
پهونس سے بهرا ہوا تها، مجهے اس قدر غصہ آيا کہ بيان نہيں کرسکتا ، سيدها
ان بزرگ کے پاس گيا اور التجا کي کہ ايسے کام چور نکمے بهوت کي شکل
نہيں ديکهنا چاہتا ، انہوں نے کچه سوچ کر فرما يا کہ اسے ايک چانس اور دينا
چاهئيے، شايد اسے گوڈي کرني نہ آتي ہو، يا گوڈي پسند نہ ہو، اس سے ہل چلوا کر بهي ديکھ لو۔،


EmoticonEmoticon